عمران خان اچانک بد کردار

blog

پی ٹی آئی کو خیر آباد کہنے والی عائشہ گلالئی نے پریس کانفرنس میں تحریک انصاف کے چیئرمین کے کردار پر الزامات لگائے تو اندر کی خبر کے مطابق  یہ دیکھ کر عمران خان کی ہنسی چھوٹ گئی، عمران خان کا پارٹی قیادت کو کہنا تھا کہ کل تک میرا کرادار ٹھیک تھا آج اچانک خراب ہوگیا

واضح رہے کے گزشتہ روز عائشہ گلالئی نے عمران خان کے خلاف شدید تنقید اور بد کرداری کے الزام لگایا تھا. پر ایک بھی ثبوت پیش نہ کر سکیں. انکا مزید کہنا تھا کے عمران خان مجھے گندے میسیجز بھیجتے تھے. جس کا وہ با آسانی ثبوت دے سکتی تھی پر وہ نہ دے سکیں جس بنا پر صحافی حضرات عائشہ کی اس بات کو بے معائنے قرار دے رہے ہیں، کافی لوگوں کا یہ بھی کہنا ہے کے یہ سب نواز پارٹی کی چال ہے یہ ماضی میں بھی ایسے ہتھکنڈے استمعال کرتے رہتے ہیں 

یہاں سوال یہ نہیں پیدا ہوتا ہے الزامات درست ہیں کے غلط، سوال یہ پیدا ضرور ہوتا ہے یہاں کوئی بھی ایک دوسرے پر آسانی سے کیچڑ اچھال سکتا ہے کوئی بھی قانون کے دائرے میں  نہیں آتا. یہ سنگین الزامات ہیں، یا تو تحقیقات کی جائے اگر عائشہ سچ بول رہی تھی تو عمران کے خلاف کوئی قانونی چارہ جوئی کی جائے اگر الزامات بے بنیاد ہیں تو عائشہ کے خلاف سخت قانونی کاروائی کرتے ہوۓ گرفتار کیا جائے. آپ کیا کہتے ہیں

Summary : Last day Aisha Gulalai allegedly criticized Imran Khan against character and corruption. but she do not give any proof. He further said that Imran Khan send me dirty messages some years. but he could not give any type of proof. some journalists react and rejecting Aisha's statement and some endorse.


3 comments

  • comment
    abdul razak baloch
    Posted on 12:29 PM August 21, 2017

    u r right yaha qanoon nahi andher nagri hai yaha koi bhi jhoota aadmi paise lekar kisi bhi shareef admi par jhooti bawahi deta hai baad ne pata chalta hai ke ye jhoot tha lekin us ke khilaf koi qanooni chara joi nahi hoti abhi do din pehle chif justic ke remarks aae ke jhoote shahdi wale ko umer qaid ki saza honi chahye lrkin mai kahta hu ke un ko bhi umer qiaad ki saza honi chahye jis in ko uksaya is aurat ki to baat mat karo char sall in ko yaad nahi aaya ghairat nahi jaga abhi jaga hai ye bilkul jhoot bol rahi hai

  • comment
    MUHAMMAD ISMAIL
    Posted on 09:57 AM August 09, 2017

    yes

  • comment
    M.S.Zafar
    Posted on 12:19 AM August 03, 2017

    میں آپ کی اس بات سے متفق ہوں کہ قصور وار کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے۔ بلا وجہ کسی کے خلاف ہرزہ سرائی اور بے بنیاد الزامات ہمارے معاشرے کا معمول بن چکا ہے اس کا تدارک ہونا چاہئے۔ حیرت ہے محترمہ کو چار سال بعد اس بات کا اچانک خیال کیسے آ گیا اور ان کی غیرت کیسے جاگ گئی۔ انسان بغض و عناد اور لالچ میں بہت کچھ کر دیتا ہے ۔ اسلام میں با قائدہ اس کی سزا موجود ہے ۔ ہمارا ملک اسلامی جمہوریہ ہے۔ یہاں کسی قانون کو اسلامی سانچے میں ڈھالنے میں کیا مشکل ہے۔ ۔جیاں تک میری معلومات کا تعلق ہے ایسا قانون موجود ہے۔ مگر مسئلہ عمل درآمد کا ہے۔ جب تک قانون کی پاسداری بہیں ہو گی معاشرے سے اس قسم کی قباحتیں ختم نہیں ہوں گی۔ اور طالع آزما اپنی ذاتی اغراض و مقاصد کے لئے دوسروں کو آلہ کار بناتے رہیں گے۔

Leave a comment

Popular Channels

See all channels

now BolPappa on Mobile App!

If you want live TV Channels in HD + fast mode now install free on android.. Click Here